اے اللہ! مدینہ کو ہماری نظروں میں محبوب بنا دے

جب حضور نبی کریمﷺ مدینہ منورہ تشریف لائے تو ابوبکر صدیق رضی اللہ تعالیٰ عنہ بیمار ہوئے، ان کو سخت بخار ہو گیا، حضرت عائشہ رضی اللہ تعالیٰ عنہا عیادت کے لئے آئیں پوچھا ، ابا جان! کیا حال ہے؟ آپ رضی اللہ تعالیٰ عنہ نے فرمایا ’’ہر آدمی اس حالت میں اپنے اہل و عیال میں صبح کرتا ہے کہ موت اس کے جوتے کے تسمہ سے زیادہ قریب ہوتی ہے‘‘.

اس کے بعد حضرت عائشہ رضی اللہ تعالٰ عنہا، حضور اکرمﷺکی خدمت اقدس میں حاضر ہوئیں اور آنحضورﷺ کو صدیق اکبر کے حال سے باخبر کیا تو حضورﷺ نے دعا کی کہ اے اللہ! جیسے ہم کو مکہ سے محبت ہے اسی طرح بلکہ اس سے بھی زیادہ مدینہ کی محبت ہمارے دلوں میں پیدا فرما دے اور اس کی آب و ہوا کو درست کر دے

اور ہمارے مد اور صاع (پیمانے) میں برکت پیدا فرما اور اس (مدینہ) کے بخار کو یہاں سے منتقل کر کے جحفہ (مقام) پہنچا دے…

Open

%d bloggers like this: