ایک انسانی جسم کو کتنا پانی پینا چاہیے؟ ایسا زبردست سائنسی فارمولا سامنے آگیا کہ حکمیوں اور ڈاکٹروں کی زبانوں کو تال لگ جائیں گے

جسمانی تھکاوٹ سے تحفظ کے ساتھ ساتھ توجہ مرکوز کرنے تک، پانی کو مناسب مقدار میں پینا متعدد امراض سے تحفظ دیتا ہے۔ مگر سوال یہ ہے کہ روزانہ کتنے گلاس پانی پینا چاہئے ؟ تو اس کا جواب آخرکار سائنسدانوں نے ڈھونڈ لیا ہے۔

امریکا کے مایو کلینک کے میڈیکل ریسرچ سینٹر نے کہا ہے کہ مردوں کو اوسطاً تیرہ کپ پانی روزانہ پینا چاہئے جبکہ خواتین میں یہ مقدار نو ہونی چاہئے۔ مگر ہر شخص کا جسم مختلف ہوتا ہے اور پانی کی ضرورت کا انحصار بھی اس کے مطابق ہوتا ہے جس کے لیے ایک سادہ سائنسی فارمولا استعمال کیا جاسکتا ہے۔

اپنے جسمانی وزن کو لیں اور اسے 2.2 سے تقسیم کریں۔ اس کے بعد جو نمبر آئے اسے اپنی عمر کے مطابق ضرب کریں اور مجموعے کو 28.3 سے تقسیم کریں۔ پھر جو نمبر آئے گا وہ بتائے گا کہ روزانہ کتنے اونس پانی پینے کی ضرورت ہے مگر اسے بھی 8 سے تقسیم کریں تاکہ گلاسوں کی تعداد میں نتیجہ سامنے آجائے۔

تاہم محققین کا کہنا تھا کہ اگر آپ ورزش کو معمول کا حصہ بنائے ہوئے ہیں تو زیادہ پانی پینے کی ضرورت ہوتی ہے کیونکہ پسینہ بھی زیادہ آتا ہے۔ تیس منٹ روزانہ ورزش کرنے والے افراد کو اضافی بارہ اونس پانی پینے کی ضرورت ہوتی ہے جبکہ غذا بھی اس حوالے سے اہم کردار ادا کرتی ہے۔

ایسی غذائیں جن میں پانی زیادہ ہو، جیسے تربوز اور کھیرا وغیرہ ، جسم سے زہریلے مواد کو خارج کرنے میں مدد دیتی ہیں۔ اس کے مقابلے میں زیادہ نمکین غذاﺅں کا استعمال جسم میں پانی کی سطح میں کمی لاتا ہے جو پیٹ پھولنے اور گیس کا باعث بھی بنتا ہے جبکہ پیاس زیادہ محسوس ہوتی ہے

Comments are closed.

Open

%d bloggers like this: